• Cricketnewspk

پرفارمنس کی وجہ سے ڈراپ کیا جاتا تو اف تک نہ کرتا لیکن میری ۔۔۔۔محمد عامر کا بڑا بیان


کرکٹ نیوز پی کے( ویب ڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کے فاسٹ باؤلر محمد عامر نے سابق کپتان اور قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور قومی ٹیم کے سابق کپتان اور باؤلنگ کوچ وقار یونس کے بارے میں بیان دیتے ہوئے کہا کہ دونوں سینئر کھلاڑی میں بھائیوں کی طرح ہیں ۔


محمد عامر نے نجی ویب سائٹ کو دیئے گئے انٹرویو میں سلیکشن کمیٹی پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ماضی میں سلیکشن کمیٹی کا سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ رویہ ٹھیک نہیں تھا اور نئی سلیکشن کمیٹی کا بھی سینئر کھلاڑیوں کے ساتھ رویہ آئیڈیل نہیں ہے۔محمد عامر نے کہا کہ کھلاڑیوں کا ٹیم میں ان آؤٹ ہونا چلتا رہتا ہے لیکن سلیکٹرز کو سینئر کھلاڑیوں جیسے حارث سہیل اور یاسر شاہ ڈراپ کرنے سے پہلے اعتماد میں لینا چاہیے تھا۔


محمد عامر نے پاکستان سپر لیگ کے بقیہ میچز جون میں کرانے کو خوش آئند کہا لیکن انہوں نے اب تک پی ایس ایل میں سامنے آنے والی خامیوں کو ہر لحاظ سے دور کرنے اور بائیو سیکور ببل کو محفوظ بنانے پر زور دیا۔محمد عامر نے مزید کہا کہ جس ہوٹل میں کھلاڑیوں کا ٹھہرا یا جا ئے وہاں کھلاڑیوں کے علاوہ کسی کو طہرانے کی اجازت نہیں دینی چاہیے۔محمد عامر نے اپنے ریٹائرمنٹ کے فیصلے بارے میں کہا کہ وہ اپنے فیصلے پر قائم ہیں اور دوبارہ پاکستان ٹیم کی قیادت اور گرین شرٹ پہننے کا باب ختم ہو گیا ہے۔ میرا مصباح الحق اور وقار یونس سے کوئی ذاتی جھگڑا نہیں، وہ میرے بڑے بھائیوں کی طرح ہیں،دونوں سے بہت کچھ سیکھا ہے، پرفارمنس کی وجہ سے ڈراپ کیا جاتا تو اف تک نہ کرتا،میری ذات کو تنقید کا نشانہ بنایاگیا۔انہوں نے مزید کہا کہ ٹیم مینجمنٹ کو اپنے کھلاڑیوں کو سپورٹ کرنا چاہیے، بھارت کے بمرا کی مثال سامنے ہے، چند میچز میں وہ زیادہ وکٹیں نہیں لے پائے لیکن کسی نے تنقید نہیں کی اور اعتماد بڑھایا، پاکستان میں بھی یہ کلچر پروان چڑھانا ہوگا۔


18 views0 comments

Cricketnewspk

  • Instagram
  • YouTube
  • Facebook
  • Twitter

Subscribe cricketnewspk

© 2020 by cricketnewspk.com all rights reserved